Gujrat Online Banner
Gujrat Online Add Gujrat Online Add

Poetry

Comments

Gujrat Online Adds

The News International

The News International

Gujrat Online Adds

The News International

ACIL


غزل

اک سراب اِس میں بہر سمت رواں ملتا ہے

دشتِ غم میں کوئی ندی نہ کنواں ملتا ہے

اِتنے مصروف ہوئے کارِ جہاں میں ہم لوگ

عشق کے واسطے اب وقت کہاں ملتا ہے

ہاں کچھ انسان تھے گزری ہوئی صدیوں میں یہاں

آج کے دَور میں انسان کہاں ملتا ہے

ہم جہاں بیٹھ کے دِل اپنا جلاتے تھے وہاں

اب بھی لپٹا ہوا پیڑوں سے دھواں ملتا ہے

پھر ہرا ہونے کا دیتا ہے انہیں مژدہ بھی

جب درختوں سے گلِ دورِ خزاں ملتا ہے

دھول جھونکی ہے یہ کس نے مری آنکھوں میں امین

راہ ملتی ہے نہ منزل کا نشاں ملتا ہے


امین عاصم
Latest Updates

غزل
Latest Updates

Hira Akhtar

وارث شاہ

احتشام دھامہ

بابا فرید

بابا بلھے شاہ

جمشید اعظم

سید عابد بخاری
Copyrights © Reserved 2009-2012. Gujrat Online . Info